تلاش کریں

البحث

میلنگ لسٹ

بريديك

موجودہ زائرین

وزٹر نمبر : 22178
موجود زائرین : 6

اعداد وشمار

12
قرآن
9
تعارف
13
کتب
255
فتاوى
10
مقالات
35
خطابات

مادہ

نہار منہ پانی پینا

سوال:

ایک روایت سوشل میڈیا پہ بہت گردش کر رہی ہے جسکا مفہوم ہے : جس نے نہار منہ پانی پیا اسکی قوت کم ہو جائے گی۔ اور اس روایت کا حوالہ معجم طبرانی کا دیا گیا ۔ اس روایت کی تحقیق اور وضاحت مطلوب ہے۔

الجواب بعون الوہاب ومنہ الصدق والصواب والیہ المرجع والمآب

یہ روایت امام طبرانی کی کتاب المعجم الأوسط میں بایں طور مروی ہے:

حَدَّثَنَا عُبَيْدُ اللَّهِ بْنُ مُحَمَّدِ بْنِ خُنَيْسٍ الدِّمْيَاطِيُّ، قَالَ: نَا مُحَمَّدُ بْنُ مَخْلَدٍ الرُّعَيْنِيُّ، قَالَ: نَا عَبْدُ الرَّحْمَنِ بْنُ زَيْدِ بْنِ أَسْلَمَ، عَنْ أَبِيهِ، عَنْ عَطَاءِ بْنِ يَسَارٍ، عَنْ أَبِي سَعِيدٍ الْخُدْرِيِّ، عَنِ النَّبِيِّ ﷺ قَالَ: " مَنْ شَرِبَ الْمَاءَ عَلَى الرِّيقِ انْتَقَصَتْ قُوَّتُهُ "

المعجم الأوسط للطبرانی : 4646

اسکی سند میں عبید اللہ بن محمد بن خنیس الدمیاطی مجہول الحال ہے۔ اور  محمد بن مخلد الرعینی اور اسکا شیخ عبد الرحمن بن زید بن اسلم دونوں ضعیف ہیں۔ لہذا یہ روایت پایہ ثبوت کو نہیں پہنچتی۔

هذا، والله تعالى أعلم،وعلمه أكمل وأتم، ورد العلم إليه أسلم،والشكر والدعاء لمن نبه وأرشد وقوم، وصلى الله على نبينا محمد وآله وأصحابه وأتباعه، وبارك وسلم


وکتبہ
ابو عبد الرحمن محمد رفیق طاہر عفا اللہ عنہ

  • الثلاثاء PM 11:21
    2022-02-08
  • 532

تعلیقات

    = 2 + 4

    /500
    Powered by: GateGold